Skip to content

یہ تصویریں تو اتنا بولتی ہیں
تو کیوں خاموش ہیں سب لوگ یکسر
یہ چہروں پر جو چسپاں پوسٹر ہیں
پڑھو تو کیا سے کیا نعرے لکھے ہیں
کسی اخبار میں جوتوں کی تشہیری مہم میں
یہ کس جلسے کا پھر نقشہ دیا ہے
ابھی کل ہی کسی آواز نے چونکا دیا تھا
یہ کیا پھر آج حیرانی نئی ہے
اسے چھوڑو پریشانی نئی ہے
ہمیں سائے کا لالچ دے کے لوگو
نئی دیوار اٹھائی جارہی ہے