Skip to content

صرف تقصیر کی ہوتی تو میں جانے دیتا

صرف تقصیر کی ہوتی تو میں جانے دیتا
بات توقیر کی ہوتی تو میں جانے دیتا !

میں محبت کی عمارت کا تو معمار نہیں
میری تعمیر کی ہوتی تو میں جانے دیتا

یار یہ بات ہے گاؤں کےسبھی پیڑوں کی
ایک شہتیر کی ہوتی تو میں جانے دیتا

سیدھا آیات کا انکار کرے ہے کافر
بات تفسیر کی ہوتی تو میں جانے دیتا

بات دلگیر کی تھی دل میں چھپا لی میں نے
کسی رہگیر کی ہوتی تو میں جانے دیتا